میکسیکو:منشیات گینگ کے سرغنہ ایل چاپو کے بیٹےکی گرفتاری کے بعد گینگ کی فوج کے ساتھ جھڑپوں میں 29 افراد ہلاک

413

میکسیکو کے بدنام زمانہ منشیات گینگ کے سرغنہ ایل چاپو کے بیٹےکی گرفتاری کے بعد گینگ کےکارندوں کی فوج کے ساتھ جھڑپوں میں 29 افراد ہلاک ہوگئے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق منشیات کی دنیا کےگاڈ فادر کہلائے جانے والے ایل چاپو کے بیٹے اوویڈیوگوزمین کو بدھ کی رات امریکی حکام کی مدد سے میکسیکو کے سکیورٹی ادارے نے ایک آپریشن میں گرفتار کیا۔

امریکا نے ایل چاپو کے بیٹےکی معلومات فراہم کرنے والےکے لیے 50 لا کھ ڈالر انعام کا اعلان کر رکھا تھا، ایل چاپو کے بیٹے کو امریکی حکام کی مدد سے 6 ماہ نگرانی کے بعد پکڑا گیا۔

اوویڈیوگوزمین کی گرفتاری کے بعد منشیات گینگ نے سکیورٹی اہلکاروں پر حملے شروع کر دیے، گینگ کے کارندوں نے دو ائیرپورٹس پربھی حملہ کیا، سڑکوں پر رکاوٹیں کھڑی کردیں اور درجنوں گاڑیوں کو آگ لگادی ۔

مختلف علاقوں میں ہونے والی جھڑپوں میں 29افراد ہلاک ہوئے، ہلاک ہونےوالوں میں منشیات گینگ کے19 ارکان کے علاوہ 10فوجی بھی شامل ہیں۔

خیال رہےکہ میکسیکو کے مشہور منشیات گینگ کا سرغنہ ایل چاپو خود بھی امریکا میں عمر قید کی سزا کاٹ رہا ہے۔

ایل چاپو کو پہلی بار 1994 میں وسطی امریکی ملک گوئٹے مالا سےگرفتارکیا گیا تھا تاہم 2001 میں وہ ایک سکیورٹی گارڈ کی مدد سے جیل سے فرار ہوگیا، اسے دوبارہ 2015 میں گرفتارکیا گیا لیکن وہ ایک بار پھر سرنگ بنا کر جیل سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا لیکن چند ماہ بعد ہی 2016 میں اسے گرفتار کرکے امریکا منتقل کردیا گیا۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.