سعودی عرب اور بھارت میں بھی منکی پاکس کے کیسز ظاہر ہونے کی تصدیق

120

اسلامی دنیا کے اہم ترین ملک سعودی عرب اور پاکستان کے پڑوسی ملک بھارت میں بھی منکی پاکس کے کیسز ظاہر ہونے کی تصدیق کردی گئی۔

خبر رساں ادارے ’رائٹرز‘ کے مطابق سعودی عرب کی وزارت صحت نے ملک میں پہلے منکی پاکس کیس رپورٹ ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ مرض کا شکار ایک مرد ہے۔

وزارت صحت کے مطابق متاثرہ شخص حال ہی میں بیرون ملک سے سعودیہ پہنچا تھا، جہاں ٹیسٹ کیے جانے پر ان میں منکی پاکس کی تشخیص ہوئی۔

حکام کے مطابق مذکورہ شخص کے بعد ان سے ملاقات کرنے اور ان کے قریب سفر کرنے والے تمام افراد کے ٹیسٹس کیے گئے، تاہم کسی دوسرے شخص میں منکی پاکس کی تشخیص نہیں ہوئی اور نہ ہی کسی نے علامات کا ذکر کیا۔

اگرچہ سعودی عرب کے حکام نے ملک میں پہلے کیس کی تصدیق کردی، تاہم یہ نہیں بتایا گیا کہ متاثرہ شخص کس ملک سے وہاں پہنچا تھا؟

سعودی عرب سے قبل گزشتہ ماہ جون کے آغاز میں ہی متحدہ عرب امارات (یو اے ای) میں منکی پاکس کے پہلے کیس کی تصدیق کی گئی تھی۔

سعودیہ کے ساتھ ساتھ بھارت نے بھی ملک میں پہلے منکی پاکس کے کیس کی تصدیق کردی۔

عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کے مطابق بھارتی وزارت صحت کے حکام نے تصدیق کی کہ حال ہی میں یو اے ای سے انڈیا آنے والے شخص میں منکی پاکس کی تصدیق ہوئی۔

رپورٹ کے مطابق متاثرہ شخص کی عمر 35 برس ہے اور وہ خلیجی ملک سے حال ہی میں وطن لوٹے تھے اور ان میں مرض کی تشخیص کے بعد انہیں الگ کرکے ان کا علاج شروع کردیا گیا۔

عالمی ادارہ صحت کے مطابق جولائی کے وسط تک بھارت اور سعودیہ کے علاوہ مجموعی طور پر دنیا کے 60 ممالک تک منکی پاکس پھیل چکا تھا اور اس کے کیسز کی تعداد 6 ہزار سے تجاوز کر چکی تھی۔

منکی پاکس کی وجہ سے رواں برس مئی کے بعد اب تک براعظم افریقہ کے باہر تین اموات کی تصدیق کی جا چکی ہے۔

عالمی ادارہ صحت منکی پاکس کے حوالے سے ہی پہلی واضح کر چکا ہے کہ اس کے کورونا کی طرح وبا بننے کے امکانات نہیں اور نہ ہی اس مرض کی وجہ سے عالمی سطح پر ہیلتھ ایمرجنسی نافذ کرنے کی ضرورت ہے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.