پی ایچ ایف کی جانب سے ایشین چیمپینز ٹرافی میں شرکت کیلئے 45کھلاڑیوں پر مشتمل قومی ہاکی تربیتی کیمپ کا اعلان

487

کراچی۔(اے پی پی):پاکستان ہاکی فیڈریشن (پی ایچ ایف) کی جانب سے ایشین چیمپینز ٹرافی میں شرکت کیلئے 45کھلاڑیوں پر مشتمل قومی ہاکی تربیتی کیمپ کا اعلان کردیا گیا،پی ایچ ایف نے قومی سینئر ہاکی ٹیم کی نئی مینجمنٹ کا بھی اعلان کردیا، کرنل (ر) عمر صابر منیجر تعینات جبکہ اولمپین ریحان بٹ اور اولمپین محمد ثقلین کوچنگ پینل میں شامل کرلئے گئے۔

پی ایچ ایف سے جمعرات کو یہاں جاری تفصیلات کے مطابق چیئرمین سلیکشن کمیٹی اولمپین کلیم اللہ خان کی سفارشات پر مشتمل سمری پر صدر پی ایچ ایف برگیڈیئر (ر) خالد سجاد کھوکھر کی حتمی منظوری کے بعد پاکستان ہاکی فیڈریشن کے زیراہتمام قومی ہاکی تربیتی کیمپ میں 45کھلاڑیوں کو تربیت کے لئے بلایا گیا ہے جن میں گول کیپرز عبداللہ اشتیاق ، اکمل حسین، علی رضا، ایم فیضان جنجوعہ، وقار، عبداللہ شیخ اور بلال خان شامل ہیں جبکہ ڈیفینڈرز میں ارباز احمد، محمد سفیان خان، محمد عبداللہ، عقیل احمد ، ایم بلال اسلم اور سعد شفیق کو مدعو کیا گیا ہے۔

مڈ فیلڈرز میں جنید منظور، احتشام اسلم، ایم مرتضی یعقوب، ایم باقر، ارباز ایاز، ایم ندیم خان، ایم زین اور محمد عمادشامل ہیں۔فارورڈز میں رانا عبالوحید، ایم عمر بھٹہ، افراز، عبدالحنان شاہد، رومان، ایم شاہزیب خان، اسامہ بشیر، ایم عمران، ارشد لیاقت، عبدالوہاب، عبدالرحمن، ذکریا حیات، علی مرتضی، بشارت علی، عبدالقیوم، بلال اکرم، محمد عدنان، رانا سہیل ریاض، وقار علی، شعیب خان، عبدالواجد، تیمور جاوید خان، سید شہباز حیدراور محمد ارسلان شامل ہیں۔دریں اثنا پاکستان ہاکی فیڈریشن نے پاکستان سینیئر ہاکی ٹیم مینجمنٹ کا بھی اعلان کردیا۔ کرنل (ر) عمر صابر پاکستان سینیئر ہاکی ٹیم کے مینجر تعینات کردیئے گئے ہیں جبکہ کوچز پینل میں اولمپین ریحان بٹ، اولمپین محمد ثقلین، اولمپین دلاور حسین، عبدالحسیم خان انٹرنیشنل شامل ہیں ۔

گول کیپنگ کوچ کی ذمہ داریاں عبدالغفور انٹرنیشنل نبھائیں گے۔ محمد شاہد فزیوتھراپسٹ ہوں گے جبکہ فزیکل ٹرینر پاکستان آرمی سے حاصل کیا جائیگا۔پاکستان ہاکی فیڈریشن کے زیراہتمام ایشین چیمپینز ٹرافی کی تیاریوں کے سلسلے میں قومی ہاکی تربیتی کیمپ 12 جون سے لاہور میں منعقد ہوگا۔ ایشین چیمپینز ٹرافی 3تا 12 اگست انڈیا کے شہر چنائے میں کھیلی جائے گی۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.