صدر نے سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر بل دستخط کیے بغیر پھر واپس بھیج دیا

173

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر بل 2023 دستخط کیے بغیر واپس بھیج دیا۔

صدرمملکت نے بل واپسی سے متعلق کہا کہ قانون سازی کی اہلیت،بل کی درستگی کا معاملہ اعلیٰ ترین عدالتی فورم کے سامنے زیرسماعت ہے۔

انہوں نے کہا کہ معاملہ زیرسماعت ہونے کے احترام میں بل پر مزید کوئی کارروائی مناسب نہیں۔

خیال رہے کہ گزشتہ دنوں بھی صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر بل 2023 نظرثانی کیلئے پارلیمنٹ کو واپس بھیج دیا۔

اس کے بعد حکومت نے بل پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے دوبارہ منظور کروالیا تھا، اب یہ بل 20 اپریل کو خود ہی ایکٹ بن جائے گا۔

دوسری جانب یہ معاملہ سپریم کورٹ میں بھی زیر سماعت ہے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.