پیٹ پھولنے، گیس ہونے کی شکایت ہے تو یہ 5 چیزیں کھائیں، نجات پائیں

92

پیٹ پھول جانا یا گیس ہونا دنیا کے دو سب سے زیادہ تکلیف دہ احساسات ہیں، کیونکہ اس سے ناصرف آپ کی طبیعت مسلسل خراب رہتی ہے بلکہ آپ کو بھوک بھی نہیں لگتی اور کچھ کھانے کو دیکھنے تک کا دل نہیں کرتا۔

جب آنتوں میں گیس جمع ہوجائے اور نکل نہ پائے، ایسے میں انسان کا پیٹ پھول جاتا ہے،یہ کیفیت مسلسل غیر آرام دہ صورتحال پیدا کردیتی ہے، یہ حالت کھانے سے خارج ہونے والی گیس کے نتیجے میں ہوتی ہے جو ہمارے جسم سے باہر نہیں نکل پاتی اور جسم کے اندر ٹھہر جاتی ہے ، یہ کافی عام ہے، اور بہت سے لوگوں کو روزانہ کی بنیاد پر اس کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

اگرچہ کئی وجوہات ہو سکتی ہیں جو پیٹ پھولنے اور جسم میں گیس کا باعث بنتی ہیں، لیکن ہمارے کھانے اس میں اہم کردار ادا کرے ہیں، اگر آپ کی خوراک میں زیادہ چکنائی والی غذائیں شامل ہیں، تو آپ قدرتی طور پر بھاری بھاری محسوس کریں گے، خوش قسمتی سے، بہت سارے کھانے ہیں جو اس بےچینی سے راحت فراہم کرسکتے ہیں-

آئیں جانتے ہیں کہ کیا کھا کر اس تکلیف سے نجات حاصل کی جاسکتی ہے۔

سونف

سونف پیٹ کے لیے انتہائی مفید ہے، جن لوگوں کو قبض کی شکایت ہو وہ باقاعدگی سے سونف کھائیں، اس کے علاوہ یہ گیس اور دیگر معدے کے مسائل کو بھی حل کرتی ہے۔

 اس کی وجہ یہ ہے کہ سونف کے بیجوں میں ایسا تیل ہوتا ہے جو ہاضمے کو ٹھیک رکھنے میں مدد فراہم کرتا ہے، اس طرح ہاضمہ بہتر ہوتا ہے۔ اس حقیقت کو مدنظر رکھتے ہوئے کہ زیادہ تر پاکستانی کھانے بہت سارے تیل اور گھی سے بنائے جاتے ہیں، سونف کے بیجوں کا ایک چائے کا چمچ راحت فراہم کرنے کے لیے حیرت انگیز کام کر سکتا ہے۔

پپیتا

قدرتی طور پر پھولے پیٹ اور گیس کے علاج کے لیے آپ کو اپنی خوراک میں ایک اور غذا ضرور شامل کرنی چاہیے، وہ ہے پپیتا۔ اس پھل میں پاپین نامی انزائم پایا جاتا ہے جو کہ کھانے میں پروٹین کو توڑنے میں مدد کرتا ہے، اس طرح کھانا ہاضمم کرنا آسان ہوجاتا ہے۔

ادرک

ادرک  گیس کے علاج کے لیے انتہائی بہترین اور کارآمد غذاؤں میں سے ایک ہے، یہ آپ کے آنتوں کے لیے کافی فائدہ مند ثابت ہو سکتا ہے۔

ادرک میں زنگیبین نامی ایک انزائم بھی ہوتا ہے، جو ہاضمہ صحیح طرح سے کرتا ہے، آپ ادرک کی چائے پیئیں اور اسے اپنے کھانوں میں شامل کریں۔

دہی

دہی پروبائیوٹکس سے بھرپور ہوتا ہے، یہ نقصان دہ بیکٹیریا کی افزائش کو روک کر ہماری آنتوں کو صحت مند رکھنے میں مدد کرتا ہے۔

دہی ہمارے جسم کو اندر سے ٹھنڈا کرتا ہے، آپ جتنا زیادہ دہی کو اپنی غذا میں شامل کریں گے، آپ کی آنتیں اتنی ہی صحت مند رہیں گی۔

پودینہ

پودینے کی تاثیر ٹھنڈی ہوتی ہے، اسی لیے اسے گرمیوں میں کھانا مفید ہے، اس سے گیس اور معدے میں جلن جیسے مسائل نہیں ہوتے۔

پودینے کا قہوہ پیئیں، اس کے علاوہ آپ پودینے کے پتوں کو سلاد میں شامل بھی کرسکتے ہیں۔

نوٹ: یہ مضمون طبی جریدوں میں شائع تفصیلات پر مبنی ہے، قارئین اپنے معالج سے بھی ضرور مشورہ کریں۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.