توہین الیکشن کمیشن کیس میں عمران خان پیش، 2 اگست کو فرد جرم عائد ہوگی

96

رکن الیکشن کمیشن اکرام اللہ خان نےکہا کہ چیئرمین پی ٹی آئی کے وارنٹ گرفتاری وکیل کو کیوں دیے؟ کیا آپ کو  وارنٹ گرفتاری کی تعمیل کا طریقہ معلوم نہیں؟ چیئرمین پی ٹی آئی کے علاوہ کسی اور کو  وارنٹ کیوں دیے؟

فواد چوہدری نے موقف اختیار کیا کہ ان کا وہی موقف ہے جو دوسرے کیس میں تھا۔

عمران خان کے وکیل شعیب شاہین نےکہا کہ چیئرمین پی ٹی آئی کے پانچ کیسز ہائی کورٹ میں ہیں، جیسے وہ فری ہوتے ہیں پیش ہو جائیں گے۔

 وقفے کے بعد کیس کی سماعت دوبارہ شروع ہوئی تو عمران خان بھی پیش ہوگئے۔

 وکیل شعیب شاہین نےکہا کہ ہم حاضر ہوگئے ہیں، ہمیں آرڈر کی کاپی نہیں ملی، میرے  پاس ریکارڈ پورا نہیں، پہلے دوسرے وکیل تھے اب میں وکیل ہوں، سماعت ستمبر تک ملتوی کردیں۔

 2 اگست کو فرد جرم عائدکرینگے: الیکشن کمیشن

ممبر الیکشن کمیشن نثار درانی کا کہنا تھا کہ 2 اگست کو فرد جرم عائد کریں گے، آئندہ سماعت پر بھی چیئرمین پی ٹی آئی ذاتی حیثیت میں پیش ہوں۔

الیکشن کمیشن نےکیس کی سماعت 2 اگست تک ملتوی کردی۔

خیال رہے کہ  الیکشن کمیشن نے توہین الیکشن کمیشن کیس میں تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کو آج گرفتار کرکے پیش کرنے کا حکم دیا تھا۔

الیکشن کمیشن نے آئی جی اسلام آبادکو ناقابل ضمانت وارنٹ کی تعمیل کی ہدایت کی تھی اور کہا تھا کہ آئی جی اسلام آباد چیئرمین تحریک انصاف کو گرفتار کرکے الیکشن کمیشن میں منگل کی صبح 10 بجے پیش کریں۔

 الیکشن کمیشن نے عدم پیشی پر عمران خان کے وارنٹ جاری کیے تھے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.